ہم شاخیں درختِ وجود کی ہیں سر پر ہے خلافت کا سایہ – نظم

روزنامہ ’’الفضل‘‘ ربوہ 18جون 2011ء میں مکرمہ امۃالباری ناصر صاحبہ کی درج ذیل مختصر نظم شائع ہوئی ہے: ہم شاخیں درختِ وجود کی ہیں سر پر ہے خلافت کا سایہ افسوس ہے ان کی حالت پر جو تپتی دھوپ میں جلتے ہیں ہم بندھ گئے ایسے رشتے میں جو سب رشتوں سے پیارا ہے دنیا …مزید پڑھیں

دُھوپ کتنی ہو خلافت کی رِدا – نظم

روزنامہ ’’الفضل‘‘ ربوہ 15ستمبر 2011ء میں شامل اشاعت مکرم عبدالکریم قدسی صاحب کا ایک قطعہ بعنوان ’’خلافت کی رِ دا ‘‘ ملاحظہ فرمائیں : دُھوپ کتنی ہو خلافت کی رِدا سایہ افگن ہے سروں پر شان سے دستِ شفقت پھر بچاتا ہے ہمیں غم کی آندھی، بے جہت طوفان سے Share on: WhatsApp

ابّا حضور (سیدنا حضرت مصلح موعودؓ)

ماہنامہ ’’تحریک جدید‘‘ ربوہ فروری 2010ء میں مکرم صاحبزادہ مرزا انس احمد صاحب کا ایک مضمون شائع ہوا ہے جس میں آپ نے حضرت مصلح موعودؓ کے بارہ میں اپنے مشاہدات کے حوالہ سے بعض یادداشتیں بیان کی ہیں جن میں سے چند درج ذیل ہیں: مضمون نگار رقمطراز ہیں کہ میری نشوونما کی عمر …مزید پڑھیں

خلیفہ کے ہم ہیں خلیفہ ہمارا – نظم

روزنامہ ’’الفضل‘‘ ربوہ 5؍اکتوبر 2012ئ میں مکرم نجیب اللہ ایاز صاحب کی ایک نظم شاملِ اشاعت ہے۔ اس نظم میں سے انتخاب پیش ہے: خلیفہ کے ہم ہیں خلیفہ ہمارا وہ دل ہے ہمارا وہ آقا ہمارا جو کابل میں لکھی گئی تھی کہانی مسیح کی صداقت کی زندہ نشانی ہم اپنی وفا پہ نہ …مزید پڑھیں

خلافت تو مولیٰ کا فضل وکرم ہے – نظم

30 ستمبر 2010ء میں مکرم خواجہ عبدالمومن صاحب کی ایک نظم شائع ہوئی ہے۔ اس کلام میں سے انتخاب ہدیۂ قارئین ہے: خلافت تو مولیٰ کا فضل وکرم ہے خلافت ہمارے لئے محترم ہے خلافت سے وابستہ جو بھی رہے گا نہیں اس کو خطرہ نہ پھر کوئی غم ہے خلافت سے ٹکرایا جو بھی …مزید پڑھیں

خلافت کی جس کو بھی خلعت ملی ہے – نظم

روزنامہ ’’الفضل‘‘ ربوہ 14 جنوری 2011ء میں مکرم اعظم نوید صاحب کی خلافت کے حوالہ سے ایک نظم شائع ہوئی ہے۔ اس نظم میں سے انتخاب پیش ہے: خلافت کی جس کو بھی خلعت ملی ہے بہت باوفا اس کو ملت ملی ہے خلافت کے سائے میں جو بھی پلا ہے اسے دین و دنیا …مزید پڑھیں

خلافت کے امیں ہم ہیں ، امانت ہم سنبھالیں گے – نظم

ماہنامہ ’’خالد‘‘ نومبر 2010ء میں مکرم اطہر حفیظ فراز صاحب کا کلام شائع ہوا ہے۔ اس میں سے انتخاب ہدیۂ قارئین ہے: خلافت کے امیں ہم ہیں ، امانت ہم سنبھالیں گے جو نعمت چھن چکی پہلے وہ نعمت ہم سنبھالیں گے خلیفہ کے لبوں سے جو گل و جوہر بکھرتے ہیں بڑے انمول موتی …مزید پڑھیں

خلافت سے منور ہوگئی ہے – نظم

ماہنامہ ’’النور‘‘ جون۔جولائی 2010ء میں مکرم ناصر احمد سید صاحب کی ایک نظم شامل اشاعت ہے۔ اس نظم میں سے انتخاب پیش ہے: خلافت سے منور ہوگئی ہے زمیں جنّت کا منظر ہوگئی ہے خلافت ہی شہادت ہے ہماری صدی اِک جس کے اوپر ہوگئی ہے بہت مسرور ہیں مسرورؔ سے ہم فضائے دل معطر …مزید پڑھیں

زمیں کی طلب نہ جہاں مانگتے ہیں – نظم

روزنامہ ’’الفضل‘‘ ربوہ 29؍جولائی 2010ء میں مکرم اطہر حفیظ فراز صاحب کی نظم ’’خلافت کا سائباں‘‘ شامل اشاعت ہے۔ اس نظم میں سے انتخاب ہدیۂ قارئین ہے: زمیں کی طلب نہ جہاں مانگتے ہیں نہ شہرت، نہ شہر و مکاں مانگتے ہیں حکومت کی خواہش نہ چاہت محل کی نہ دنیا کے سود و زیاں …مزید پڑھیں

کہاں ممکن ترے فضلوں کا ارقام – خلافت احمدیہ کے لئے اللہ تعالیٰ کی تائید و نصرت

روزنامہ ’’الفضل‘‘ ربوہ 24مئی 2011ء میں مکرم عبدالماجد طاہر صاحب (ایڈیشنل وکیل التبشیر لندن) کا ایک مضمون شائع ہوا ہے جس میں خلافت احمدیہ کے لئے اللہ تعالیٰ کی تائید و نصرت کے ایمان افروز واقعات بیان کئے گئے ہیں۔ حضرت اقدس مسیح موعودؑکو اللہ تعالیٰ نے الہاماً یہ بشارت دی تھی کہ میں تیری …مزید پڑھیں

عہد خلافت خامسہ میں پوری ہونے والی عظیم پیشگوئیاں اور نشانات

روزنامہ ’’الفضل‘‘ ربوہ 24مئی 2011ء میں مکرم عبدالسمیع خان صاحب کا ایک مضمون شائع ہوا ہے جس میں خلافت احمدیہ کے لئے اللہ تعالیٰ کی تائید و نصرت کے ایمان افروز واقعات بیان کئے گئے ہیں۔ = زندہ خدا کی قائم کردہ خلافت کی سچائی کا ایک ثبوت یہ بھی ہوتا ہے کہ ماضی میں …مزید پڑھیں

خلافت کے پرتَو میں بیٹھے یہاں – نظم

ماہنامہ ’’احمدیہ گزٹ‘‘ کینیڈا مئی 2010ء میں مکرم محمد ہادی صاحب کی ایک نظم شامل اشاعت ہے۔ اس نظم میں سے انتخاب ملاحظہ فرمائیں: خلافت کے پرتَو میں بیٹھے یہاں ستاروں سے آگے کا دیکھا جہاں خلافت نبوت کے منہاج پر خدا کی عنایات کا ہے نشاں عقائد ، معارف ، حقائق ہوئے وجودِ خلافت …مزید پڑھیں

اطاعت خلافت کے نمونے

روزنامہ ’’الفضل‘‘ ربوہ 8 دسمبر 2010ء میں مکرم نصیر احمد انجم صاحب کا مضمون شائع ہوا ہے جس میں اطاعتِ خلافت کی قابل تقلید مثالیں پیش کی گئی ہیں۔ ٭ خلفاء کرام کا اپنا نمونہ تو یہ ہے کہ حضرت خلیفۃالمسیح الاوّل کے متعلق حضرت مسیح موعودؑنے فرمایا تھا: ’’وہ ہر امر میں میری اس …مزید پڑھیں

چاند کی روشن کرنوں میں جب اس کا چاند سا مکھڑا ہوگا – نظم

روزنامہ ’’الفضل‘‘ ربوہ 19؍جولائی 2010ء میں مکرم ملک منیر احمد ریحان صابرؔ کی ایک نظم شامل اشاعت ہے۔ اس نظم سے انتخاب ہدیۂ قارئین ہے: چاند کی روشن کرنوں میں جب اس کا چاند سا مکھڑا ہوگا جانے وہ دیسوں کا راجا ، کیسے دیس میں رہتا ہوگا اس کی یاد بسا کر دل میں …مزید پڑھیں

خلافت جُوئے شیریں ہے خلافت آسمانی ہے – نظم

ماہنامہ ’’النور‘‘ امریکہ مارچ 2010ء میں شائع ہونے والی مکرم سعادت اکرم صاحب کی ایک نظم سے انتخاب پیش ہے: خلافت جُوئے شیریں ہے خلافت آسمانی ہے ابلتے تازہ چشموں کا یہ ٹھنڈا شیریں پانی ہے خلافت دراصل حصہ نبوت کا امامت کا یہ اُس کے جاری دعووں کا نظامِ جاودانی ہے خدا کے ہاتھ …مزید پڑھیں

محترم چودھری محمدانور حسین صاحب کی خلافت احمدیہ کے ساتھ والہانہ عقیدت

روزنامہ ’’الفضل‘‘ ربوہ 15؍اپریل 2010ء میں مکرم محمود مجیب اصغر صاحب کے قلم سے محترم چودھری محمد انور حسین صاحب سابق امیر ضلع شیخوپورہ کی خلافت احمدیہ سے والہانہ محبت کے بارہ میں ایک مضمون شامل اشاعت ہے۔ محترم چوہدری محمد انور حسین صاحب ربوہ تو اکثر آتے جاتے تھے لیکن خلیفۂ وقت جہاںبھی تشریف …مزید پڑھیں

کب منتشر دلوں کو امامت نصیب ہے – نظم

ماہنامہ ’’النور‘‘ امریکہ مئی 2010ء میں خلافت سے متعلق شائع ہونے والی مکرمہ ارشاد عرشی ملک صاحبہ کی ایک طویل نظم سے انتخاب پیش ہے: کب منتشر دلوں کو امامت نصیب ہے اک دوسرے سے بغض و عداوت نصیب ہے تم ایک بھیڑبھاڑ کی صورت ہو مجتمع نہ رہنما نہ کوئی قیادت نصیب ہے سو …مزید پڑھیں

دِل کی دھڑکن میں، تمناؤں میں وہ بستے ہیں – نظم

روزنامہ ’’الفضل‘‘ ربوہ 24؍فروری 2010ء میں شائع ہونے والی مکرم عبدالصمد قریشی صاحب کی ایک نظم سے انتخاب پیش ہے: دِل کی دھڑکن میں، تمناؤں میں وہ بستے ہیں ہاں اسی کیف میں سب شام و سحر کٹتے ہیں ہر طرف پیار کی خوشبو سی بکھر جاتی ہے ایک مُسکان لئے جب بھی وہ لب …مزید پڑھیں

نبوت کا تتمہ ہے خلافت – نظم

روزنامہ ’’الفضل ‘‘ربوہ 16؍اکتوبر 2009ء میں شامل اشاعت مکرم عبدالعزیز منگلا صاحب کے کلام سے انتخاب ملاحظہ فرمائیں: نبوت کا تتمہ ہے خلافت دل و جاں کا سہارا ہے خلافت خلافت باعث تمکینِ دیں ہے خلافت حامل فتحِ مبیں ہے خلافت ایک لعلِ بے بہا ہے مریضوں کا یہ پیغام شفا ہے خلافت باعث تسکینِ …مزید پڑھیں

ہمارے سروں پر خلافت کا سایہ – نظم

روزنامہ ’’الفضل ‘‘ربوہ 26؍اکتوبر 2009ء میں شامل اشاعت مکرم راجہ محمد یوسف خان صاحب کی ایک نظم سے انتخاب ملاحظہ فرمائیں: ہمارے سروں پر خلافت کا سایہ فلک سے ہے اترا یہ برکت کا سایہ منور ہوئے پھر سے اکنافِ عالم عدم کو روانہ ہے ظلمت کا سایہ محافظ ہے فکر و عمل کے جہاں …مزید پڑھیں

خلافت باعث صد جلوہ ہائے نور یزدانی – نظم

روزنامہ ’’الفضل‘‘ ربوہ 22مئی 2009ء میں شامل اشاعت مکرم عبدالحمید خان شوق صاحب کے کلام میں سے انتخاب ملاحظہ فرمائیں: خلافت باعث صد جلوہ ہائے نور یزدانی خلافت سرّ شان و شوکتِ آیات قرآنی خلافت رحمت حق مظہر صد لطفِ ایمانی خلافت آفتاب و نیر ملت کی تابانی خلافت ظلمتِ کفر و ضلالت کے لئے …مزید پڑھیں

حسین دَور ہے یہ دَور ہے خلافت کا – نظم

روزنامہ ’’الفضل ‘‘ربوہ 26؍ مئی 2009ء میں شامل اشاعت مکرم ناصر سید صاحب کے کلام سے انتخاب ملاحظہ فرمائیں: حسین دَور ہے یہ دَور ہے خلافت کا چراغ لے کے چلے ہم تری اطاعت کا کسی بھی بادِ مخالف کا خوف ہم کو نہیں ہماری پُشت پہ ہے ہاتھ اک امامت کا وہی بہار ہے …مزید پڑھیں

تُم امامت ہی امامت سر تاپا – نظم

روزنامہ ’’الفضل ‘‘ربوہ 9؍ ستمبر 2009ء میں شامل اشاعت مکرمہ ارشاد عرشی ملک صاحبہ کی ایک بہت طویل نظم سے انتخاب ہدیۂ قارئین ہے: تُم امامت ہی امامت سر تاپا ہم اطاعت ہی اطاعت سرتاپا اُس طرف ندرت ہی ندرت سر تا پا اِس طرف حیرت ہی حیرت سر تا پا کھولنے کا لب مجھے …مزید پڑھیں

دل کی راحت کا یہ سامان رہے صدیوں تک – نظم

روزنامہ ’’الفضل‘‘ ربوہ 21؍مئی 2009ء میں مکرم عبدالصمد قریشی صاحب کی ایک نظم شامل اشاعت ہے۔ اس نظم سے انتخاب پیش ہے: دل کی راحت کا یہ سامان رہے صدیوں تک ہم پہ مولیٰ کا یہ احسان رہے صدیوں تک تا قیامت رہیں ہم عشقِ محمدؐ کے اسیر ہم فقیروں کی یہی شان رہے صدیوں …مزید پڑھیں

یہ عزت ، آبرو ، عظمت ، خلافت کے ہی دَم سے ہے – نظم

ہفت روزہ ’’بدر‘‘ قادیان 6؍مئی 2010ء میں شائع ہونے والی مکرم مسعود احمد چودھری صاحب کی ایک نظم سے انتخاب پیش ہے: یہ عزت ، آبرو ، عظمت ، خلافت کے ہی دَم سے ہے ہر اِک پہلو سے عافیت خلافت کے ہی دَم سے ہے ہے جس میں استقامت حوصلہ اور بے پناہ جرأت …مزید پڑھیں