اداریہ: جماعت احمدیہ میں ذیلی تنظیموں اور ذیلی نظاموں کا اولین فرض

(مطبوعہ سہ ماہی اسماعیل اکتوبر تا دسمبر 2012ء) اداریہ پیارے بھائیو! جماعت احمدیہ میں ذیلی تنظیمیں اور دیگر تمام ذیلی نظام اس لئے قائم کئے گئے ہیں تاکہ وہ خلیفۂ وقت کی بے مثال اطاعت کرنے والے مخلص و وفادار خدام اور نظام خلافت کے استحکام، اس کی مضبوطی اور اس کی حفاظت کے لئے …مزید پڑھیں

تھی رفتار میں بجلیوں کی سی تیزی جب اس نے سنبھالی زمامِ خلافت – نظم

روزنامہ ’’الفضل‘‘ ربوہ 17فروری 2012ء (مصلح موعود نمبر) میں مکرمہ امۃالباری ناصر صاحبہ کی ایک نظم شائع ہوئی ہے جس میں سے انتخاب ہدیۂ قارئین ہے: تھی رفتار میں بجلیوں کی سی تیزی جب اس نے سنبھالی زمامِ خلافت تسلسل ہے عہدِ مسیحا کا گویا ہے جاری وساری نظامِ خلافت وہ تھا ایک جُہد ِمسلسل …مزید پڑھیں

اس ارمغانِ زیست کا ارماں تمہی تو ہو – نظم

روزنامہ الفضل ربوہ 24مئی 2012ء میں مکرم عبدالصمد قریشی صاحب کی ایک خوبصورت نظم شامل اشاعت ہے۔ اس نظم میں سے انتخاب پیش ہے: اس ارمغانِ زیست کا ارماں تمہی تو ہو اہل وفا کے چَین کا ساماں تمہی تو ہو آقا! سبھی کے درد کا درماں تمہی تو ہو تم ہو ہمارے دلبر و …مزید پڑھیں

چمن کے پتے پتے پر لکھا نامِ خلافت ہے – نظم

روزنامہ الفضل ربوہ 24مئی 2012ء میں شامل اشاعت مکرمہ فریحہ ظہیر صاحبہ کے کلام میں سے انتخاب پیش ہے: چمن کے پتے پتے پر لکھا نامِ خلافت ہے فلک سے بھی کہیں اونچا یہ اکرامِ خلافت ہے فضا جس سے لرز اٹھے پہاڑوں کے جگر پانی زمیں گردش سے تھم جائے وہ الہامِ خلافت ہے …مزید پڑھیں

زمیں پہ خدا کی ہے رحمت خلافت – نظم

روزنامہ ’’الفضل‘‘ ربوہ 12 مئی 2012ء میں خلافت جوبلی کے حوالہ سے کہی گئی مکرم محمد اسلم صابر صاحب کی ایک نظم شامل اشاعت ہے۔ اس نظم میں سے انتخاب پیش ہے: زمیں پہ خدا کی ہے رحمت خلافت تحفّظِ دیں کی ضمانت خلافت کرو دل سے اے مومنو! شکرِ ایزد امیں تم ۔ خدا …مزید پڑھیں

رہبر کے لئے دوستو راہوں کو سجا دو – نظم

روزنامہ ’’الفضل‘‘ ربوہ 2؍اکتوبر 2012ء میں مکرم فاروق محمود صاحب کی خلافت کے حوالہ سے ایک نظم شامل اشاعت ہے۔ اس نظم میں سے انتخاب ملاحظہ فرمائیں: رہبر کے لئے دوستو راہوں کو سجا دو اور دیدہ و دل فرشِ سرِراہ بچھا دو اس رہ میں اَنا کی سبھی دیواریں گرا دو ہے اس میں …مزید پڑھیں

منکرینِ خلافت کا انجام

رسالہ ’’مشکوٰۃ‘‘ قادیان مئی 2011ء میں مکرم سیّد کلیم الدین صاحب مربی سلسلہ کی ایک تقریر بعنوان ’’منکرینِ خلافت کا انجام‘‘ شامل اشاعت ہے۔ حضرت مسیح موعود علیہ السلام کی وفات کے بعد جب حضرت مولوی نورالدین صاحبؓ سے بزرگانِ جماعت نے خلافت کی ذمہ داریاں سنبھالنے کی درخواست کی تو آپؓ نے فرمایا کہ …مزید پڑھیں

ہمیں بخشی ہے مولیٰ نے خلافت آسمانی بھی – نظم

ہفت روزہ ’’بدر‘‘ قادیان 2؍جون 2011ء میں برکات خلافت کے حوالہ سے مکرم خواجہ عبدالمومن صاحب کی ایک نظم شامل اشاعت ہے۔ اس نظم کا پہلا بند ملاحظہ فرمائیں: ہمیں بخشی ہے مولیٰ نے خلافت آسمانی بھی دکھائی ہے ہمیں مولیٰ نے اس کی کامرانی بھی خلافت نے ہمیں ہر اِک اندھیرے سے نکالا ہے …مزید پڑھیں

خدا کا ہے وعدہ کہ صالح ہیں جو – نظم

روزنامہ ’’الفضل‘‘ ربوہ 5دسمبر 2012ء میں مکرمہ ح۔فہیم صاحبہ کی ’’برکات خلافت ‘‘ کے موضوع پر کہی جانے والی ایک نظم میں سے انتخاب ہدیۂ قارئین ہے: خدا کا ہے وعدہ کہ صالح ہیں جو خلافت کی خلعت انہیں دے گا وہ وہ ہوں نور دیں، یا کہ محمود وہ ہوں ناصر یا طاہر یا …مزید پڑھیں

وفا کے دیپ جلائیں کہ پھر بڑھے ایماں – نظم

ماہنامہ ’’النور‘‘ امریکہ نومبرودسمبر 2012ء میں مکرم صادق باجوہ صاحب کی ایک نظم شائع ہوئی ہے جو حضرت خلیفۃالمسیح الخامس ایدہ اللہ تعالیٰ کے ورودِ امریکہ کے موقع پر کہی گئی ہے۔ اس نظم میں سے انتخاب ہدیۂ قارئین ہے: وفا کے دیپ جلائیں کہ پھر بڑھے ایماں ہو طَے سلوک ، عطا تقویٰ ہو …مزید پڑھیں

حضرت خلیفۃالمسیح‌الرابع کی چند یادیں

جماعت احمدیہ برطانیہ کے سیدنا طاہر نمبر میں مکرم چوہدری حمید اللّہ صاحب وکیل اعلیٰ تحریک جدید کی چند خوبصورت یادیں شامل اشاعت ہیں- ٭ ۲۶؍اپریل۱۹۸۴ء کوجنرل ضیاء الحق نے آرڈیننس xx جاری کیا اوررات کی خبروں میں اس کا اعلان ہوا۔ رات 10بجے حضرت خلیفۃالمسیح الرابع رحمہ اللہ تعالیٰ نے مرکزی عہدیداروں کا ایک …مزید پڑھیں

ہر نقش پا بلند ہے دیوار کی طرح (سیدنا حضرت خلیفۃ المسیح الرابع ؒکےچند اوصاف)

جماعت احمدیہ برطانیہ کے سیدنا طاہر نمبر میں سیدنا حضرت خلیفۃ المسیح الرابع ؒکے اوصافِ کریمانہ پر مبنی ایک مضمون ہر نقش پا بلند ہے دیوار کی طرح (مرتّبہ: محمود احمد ملک) سیدنا حضرت خلیفۃالمسیح الرابع رحمہ اللہ تعالیٰ کی پاکیزہ حیات جہد مسلسل سے عبارت ہے اور اس حیات جاوداں کا احاطہ چند خصوصی …مزید پڑھیں

اعجاز خلافت۔ غیرمعمولی شفا کے واقعات

=… روزنامہ ’’الفضل‘‘ ربوہ 16 مئی 2011ء میں مکرمہ ص۔ مسعود صاحبہ ’’خلافت کا معجزہ‘‘ بیان کرتے ہوئے رقمطراز ہیں کہ 14؍ اگست 2007ء کو مَیں شدید طور پر بیمار ہوگئی۔ الٹیوں کی وجہ سے پانی کی شدید کمی سے مَیں بیہوش ہوگئی۔ ہسپتال میں ڈاکٹروں نے معائنہ کرکے بتایا کہ میری زندگی صرف چند …مزید پڑھیں

میرا دین و ایماں خلافت میں پنہاں – نظم

روزنامہ ’’الفضل‘‘ ربوہ 24 دسمبر 2011ء میں مکرم محمود انور صاحب کا کلام شامل اشاعت ہے۔ اس نظم میں سے انتخاب ہدیۂ قارئین ہے: میرا دین و ایماں خلافت میں پنہاں ہے تمکینِ دیں اس صداقت میں پنہاں ہے اِس دورِ نخوت ہوا و ہوس میں اک آبِ حیات اس حلاوت میں پنہاں کروں پیش …مزید پڑھیں

کون سا فیض ہے جاری جو سدا رہتا ہے – نظم

روزنامہ ’’الفضل‘‘ ربوہ 27؍جون 2011ء میں مکرم چودھری شبیر احمد صاحب کی ایک نظم ’’دائمی منبع فیض‘‘ کے عنوان سے شائع ہوئی ہے۔ اس نظم میں سے انتخاب ہدیۂ قارئین ہے: کون سا فیض ہے جاری جو سدا رہتا ہے وہ تو بس مولا کا دَر ہے جو کھُلا رہتا ہے للہ الحمد کہ ہم …مزید پڑھیں

مبارک مبارک خلافت مبارک – نظم

روزنامہ ’’الفضل‘‘ ربوہ 14 دسمبر 2011ء میں خلافت کے حوالہ سے شائع ہونے والی مکرم سید طاہر احمد زاہد صاحب کی ایک نظم میں سے انتخاب پیش ہے: مبارک مبارک خلافت مبارک یہ تجدیدِ عہد و محبت مبارک مسرت ہے دل میں مگر آنکھ نم ہے مرے آنسوؤں کی عقیدت مبارک یہ سر سجدے میں …مزید پڑھیں

آج میرے دل نے مجھ سے پھر کہا – قطعہ

روزنامہ ’’الفضل‘‘ ربوہ 9اپریل 2012ء میں مکرم عامر احمدی صاحب کا ایک قطعہ شامل اشاعت ہے۔ ملاحظہ فرمائیں : ’’آج میرے دل نے مجھ سے پھر کہا یاد کر پھر سے وہی عہدِ وفا‘‘ جان و دل سے ہیں خلافت پر فدا لاجَرَم ہر ایک دل ہے کہہ رہا حضرتِ مسرور ہیں میرے حضور کس …مزید پڑھیں

چشمِ ویران کو دیدہ ور مل گیا دل کی بے چینیوں کو قرار آ گیا – نظم

روزنامہ ’’الفضل‘‘ ربوہ 29اگست 2011ء میں مکرم الطاف حسین صاحب کا کلام شامل اشاعت ہے جو اُس وقت کہا گیا جب کئی ماہ کے وقفہ کے بعد حضور انور ایدہ اللہ تعالیٰ بنصرہ العزیز کی زیارت انہوں نے MTA پر کی۔ چشمِ ویران کو دیدہ ور مل گیا دل کی بے چینیوں کو قرار آ …مزید پڑھیں

ہم شاخیں درختِ وجود کی ہیں سر پر ہے خلافت کا سایہ – نظم

روزنامہ ’’الفضل‘‘ ربوہ 18جون 2011ء میں مکرمہ امۃالباری ناصر صاحبہ کی درج ذیل مختصر نظم شائع ہوئی ہے: ہم شاخیں درختِ وجود کی ہیں سر پر ہے خلافت کا سایہ افسوس ہے ان کی حالت پر جو تپتی دھوپ میں جلتے ہیں ہم بندھ گئے ایسے رشتے میں جو سب رشتوں سے پیارا ہے دنیا …مزید پڑھیں

دُھوپ کتنی ہو خلافت کی رِدا – نظم

روزنامہ ’’الفضل‘‘ ربوہ 15ستمبر 2011ء میں شامل اشاعت مکرم عبدالکریم قدسی صاحب کا ایک قطعہ بعنوان ’’خلافت کی رِ دا ‘‘ ملاحظہ فرمائیں : دُھوپ کتنی ہو خلافت کی رِدا سایہ افگن ہے سروں پر شان سے دستِ شفقت پھر بچاتا ہے ہمیں غم کی آندھی، بے جہت طوفان سے Share on: WhatsApp

ابّا حضور (سیدنا حضرت مصلح موعودؓ)

ماہنامہ ’’تحریک جدید‘‘ ربوہ فروری 2010ء میں مکرم صاحبزادہ مرزا انس احمد صاحب کا ایک مضمون شائع ہوا ہے جس میں آپ نے حضرت مصلح موعودؓ کے بارہ میں اپنے مشاہدات کے حوالہ سے بعض یادداشتیں بیان کی ہیں جن میں سے چند درج ذیل ہیں: مضمون نگار رقمطراز ہیں کہ میری نشوونما کی عمر …مزید پڑھیں

خلیفہ کے ہم ہیں خلیفہ ہمارا – نظم

روزنامہ ’’الفضل‘‘ ربوہ 5؍اکتوبر 2012ئ میں مکرم نجیب اللہ ایاز صاحب کی ایک نظم شاملِ اشاعت ہے۔ اس نظم میں سے انتخاب پیش ہے: خلیفہ کے ہم ہیں خلیفہ ہمارا وہ دل ہے ہمارا وہ آقا ہمارا جو کابل میں لکھی گئی تھی کہانی مسیح کی صداقت کی زندہ نشانی ہم اپنی وفا پہ نہ …مزید پڑھیں

خلافت تو مولیٰ کا فضل وکرم ہے – نظم

30 ستمبر 2010ء میں مکرم خواجہ عبدالمومن صاحب کی ایک نظم شائع ہوئی ہے۔ اس کلام میں سے انتخاب ہدیۂ قارئین ہے: خلافت تو مولیٰ کا فضل وکرم ہے خلافت ہمارے لئے محترم ہے خلافت سے وابستہ جو بھی رہے گا نہیں اس کو خطرہ نہ پھر کوئی غم ہے خلافت سے ٹکرایا جو بھی …مزید پڑھیں

خلافت کی جس کو بھی خلعت ملی ہے – نظم

روزنامہ ’’الفضل‘‘ ربوہ 14 جنوری 2011ء میں مکرم اعظم نوید صاحب کی خلافت کے حوالہ سے ایک نظم شائع ہوئی ہے۔ اس نظم میں سے انتخاب پیش ہے: خلافت کی جس کو بھی خلعت ملی ہے بہت باوفا اس کو ملت ملی ہے خلافت کے سائے میں جو بھی پلا ہے اسے دین و دنیا …مزید پڑھیں

خلافت کے امیں ہم ہیں ، امانت ہم سنبھالیں گے – نظم

ماہنامہ ’’خالد‘‘ نومبر 2010ء میں مکرم اطہر حفیظ فراز صاحب کا کلام شائع ہوا ہے۔ اس میں سے انتخاب ہدیۂ قارئین ہے: خلافت کے امیں ہم ہیں ، امانت ہم سنبھالیں گے جو نعمت چھن چکی پہلے وہ نعمت ہم سنبھالیں گے خلیفہ کے لبوں سے جو گل و جوہر بکھرتے ہیں بڑے انمول موتی …مزید پڑھیں