حضرت صاحبزادی سیدہ ناصرہ بیگم صاحبہ

روزنامہ ’’الفضل‘‘ ربوہ 18؍اپریل 2012ء میں مکرمہ شکیلہ طاہرہ صاحبہ (مدیرہ رسالہ النساء کینیڈا ) کا مرتّبہ ایک مضمون ماہنامہ ’’النساء‘‘ کینیڈا مئی تا اگست 2011ء سے منقول ہے جس میں حضرت صاحبزادی ناصرہ بیگم صاحبہ کا ذکرخیر کیا گیا ہے۔ حضرت مصلح موعود رضی اللہ عنہ فرماتے ہیں: ’’…… حضرت مسیح موعود علیہ السلام …مزید پڑھیں

حضرت صاحبزادہ مرزا شریف احمد صاحبؓ

روزنامہ ’’الفضل‘‘ ربوہ 10؍مئی 2012ء میں محترم مولانا ظفر محمد صاحب کا مضمون شائع ہوا ہے جس میں حضرت صاحبزادہ مرزا شریف احمد صاحبؓ کی سیرۃ کے حوالہ سے چند امور پیش کئے گئے ہیں۔ 1936-37ء میں جب جماعت احمدیہ کے خلاف احرار کی شورش زوروں پر تھی تو اس فتنہ کے مقابلہ کے شعبہ …مزید پڑھیں

تربیت اولادکے عملی نمونے

روزنامہ ’’الفضل‘‘ ربوہ 19 و 20؍اپریل 2012ء میں مکرم حافظ عبد الحمید صاحب کے قلم سے ایک مضمون شاملِ اشاعت ہے جس میں تربیتِ اولاد کے عملی نمونوں کے حوالہ سے چند روشن مثالیں پیش کی گئی ہیں۔ ٭ آنحضرتﷺ نے نہ صرف اپنی احادیث میں بارہا تربیتِ اولاد کے مضمون کو بیان فرمایا ہے …مزید پڑھیں

حضرت صاحبزادہ مرزا منصور احمد صاحب

حضرت صاحبزادہ مرزا منصور احمد صاحب کی سیرت کے بہت سے خوبصورت واقعات، متفرق احباب کے قلم سے، ماہنامہ ’’انصاراللہ‘‘ مارچ 2000ء کی زینت ہیں۔ ٭…مکرم سید قمر سلیمان احمد صاحب لکھتے ہیں کہ حضرت میاں صاحب ایک ایسے انسان تھے جو تصنع سے بالکل پاک تھے۔ چھوٹی چھوٹی شفقتیں بس یونہی بکھیرتے رہتے۔ ایک …مزید پڑھیں

حضرت صاحبزادہ مرزا منصور احمد صاحب

حضرت صاحبزادہ مرزا منصور احمد صاحب کا ذکر خیر کرتے ہوئے ماہنامہ ’’انصاراللہ‘‘ مارچ 2000ء میں شامل اشاعت اپنے مضمون میں مکرم ناصر احمد ظفر بلوچ صاحب لکھتے ہیں کہ حضرت صاحبزادہ صاحب کے ساتھ میرا تعلق 1970ء میں شروع ہوا۔ آپ نے ذاتی آرام کو ہمیشہ جماعتی مفاد پر قربان کئے رکھا۔ پیرانہ سالی …مزید پڑھیں

حضرت صاحبزادہ مرزا منصور احمد صاحب

حضرت صاحبزادہ مرزا منصور احمد صاحب کا ذکر خیر کرتے ہوئے ماہنامہ ’’انصاراللہ‘‘ مارچ 2000ء میں شامل اشاعت اپنے مضمون میں مکرم ملک منور احمد جاوید صاحب لکھتے ہیں کہ حضرت صاحبزادہ صاحب کو حضرت خلیفۃالمسیح سے بے پناہ محبت تھی۔ جب بھی آپ کو حضور انور کی کسی سفر کے لئے روانگی کا علم …مزید پڑھیں

حضرت صاحبزادہ مرزا منصور احمد صاحب

حضرت صاحبزادہ مرزا منصور احمد صاحب کا ذکر خیر کرتے ہوئے ماہنامہ ’’انصاراللہ‘‘ مارچ 2000ء میں شامل اشاعت اپنے مضمون میں مکرم رشید احمد صاحب لکھتے ہیں کہ حضرت صاحبزادہ صاحب کے ساتھ تقریباً 35 سال خاکسار کو خدمت کا موقعہ ملا۔ 1984ء میں ضیاء آرڈیننس کے بعد ہزاروں احمدی احباب کے ساتھ ساتھ آپ …مزید پڑھیں

حضرت صاحبزادہ مرزا منصور احمد صاحب

حضرت صاحبزادہ مرزا منصور احمد صاحب کا ذکر خیر کرتے ہوئے ماہنامہ ’’انصاراللہ‘‘ مارچ 2000ء میں شامل اشاعت اپنے مضمون میں مکرم مولانا سلطان محمود انور صاحب لکھتے ہیں کہ تکلّف اور نمائش سے آپ کی طبیعت کوسوں دور تھی لیکن اس میں ہرگز کوئی مبالغہ نہیں کہ ذکرالٰہی آپ کی روح کی غذا تھی۔ …مزید پڑھیں

حضرت صاحبزادہ مرزا منصور احمد صاحب

ماہنامہ ’’انصاراللہ‘‘ مارچ 2000ء میں شاملِ اشاعت ایک انٹرویو میں محترم صاحبزادہ مرزا مسرور احمد صاحب بیان کرتے ہیں کہ حضرت صاحبزادہ مرزا منصور احمد صاحب نہایت معمورالاوقات تھے، آرام طلبی کو پسند نہ فرماتے، آپ کے دل میں غنا، بے نفسی اور قناعت تھی۔ ملازمین کے ساتھ بہت حسن سلوک کرتے، اُن کے بچوں …مزید پڑھیں

محترمہ صاحبزادی امۃالقدوس صاحبہ: یہ مرا باپ ہے

ماہنامہ ’’انصاراللہ‘‘ مارچ 2000ء میں شاملِ اشاعت حضرت صاحبزادہ مرزا منصور احمد صاحب کی یاد میں محترمہ صاحبزادی امۃالقدوس صاحبہ کی ایک آزاد نظم سے چند سطریں ملاحظہ فرمائیے: یہ مرا باپ ہے دوستوں کے لئے ٹھنڈے اور میٹھے پانی کی جوئے رواں پَر غضب میں جو آئے تو آتِش فشاں اس کی فطرت میں …مزید پڑھیں

حضرت صاحبزادہ مرزا منصور احمد صاحب کی یاد میں ماہنامہ انصاراللہ کا خصوصی نمبر

تعارف حضرت صاحبزادہ مرزا منصور احمد صاحب کی یاد میں ماہنامہ انصاراللہ کا خصوصی نمبر مارچ 2000ء کا ماہنامہ ’’انصاراللہ‘‘ ربوہ ایک خصوصی اشاعت ہے جو حضرت صاحبزادہ مرزا منصور احمد صاحب کی یاد میں مدون کیا گیا ہے۔ یہ خاص پرچہ بہت سے عمدہ مضامین اور تاریخی تصاویر پر مشتمل ہے جو حضرت صاحبزادہ …مزید پڑھیں

حضرت صاحبزادہ مرزا منصور احمد صاحب

روزنامہ ’’الفضل‘‘ ربوہ 17؍نومبر 1998ء میں حضرت صاحبزادہ مرزا منصور احمد صاحب کا ذکر خیر کرتے ہوئے مکرم ناصر احمد ظفر بلوچ صاحب رقمطراز ہیں کہ حضرت میاں صاحب میں بے پناہ جرأت تھی۔ 1987ء میں جب آپ کے خلاف تھانہ ربوہ میں ایک سراسر جھوٹا مقدمہ درج ہوا تو ایک ذمہ دار عہدیدار نے …مزید پڑھیں

حضرت صاحبزادہ مرزا منصور احمد صاحب

روزنامہ ’’الفضل‘‘ ربوہ 25؍فروری 1998ء میں حضرت صاحبزادہ مرزا منصور احمد صاحب کا ذکر خیر کرتے ہوئے مکرم چودھری شبیر احمد صاحب بیان کرتے ہیں کہ حضرت میاں صاحب کو خلافت کا اتنا احترام تھا کہ خلیفہ وقت کے سامنے بڑے مؤدّب اور خاموش رہا کرتے تھے۔ ایک مرتبہ حضرت خلیفۃالمسیح الثالثؒ نے مجھے یاد …مزید پڑھیں

دو اسیرانِ راہ مولیٰ: حضرت صاحبزادہ مرزا شریف احمد صاحبؓ اور حضرت صاحبزادہ مرزا ناصر احمد صاحبؒ

روزنامہ ’’الفضل‘‘ ربوہ 17؍مارچ 1999ء میں مکرم محمد بشیر زیروی صاحب کا ایک مضمون ماہنامہ ’’خالد‘‘ کے ’’سیدنا ناصر نمبر‘‘ سے منقول ہے۔ مضمون نگار کو 1953ء میں اسیر راہ مولیٰ بننے کا شرف حاصل ہوا اور یہ سعادت بھی کہ تین روز تک آپ کو اُسی کوٹھڑی میں پابندسلاسل رکھا گیا جہاں حضرت صاحبزادہ …مزید پڑھیں

حضرت صاحبزادہ مرزا شریف احمد صاحبؓ

روزنامہ ’’الفضل‘‘ ربوہ 16 و 17 دسمبر 2011ء میں حضرت صاحبزادہ مرزا شریف احمد صاحبؓ سے متعلق ذاتی یادداشتوں پر مبنی مکرم چوہدری رشید الدین صاحب کا ایک تفصیلی مضمون شامل اشاعت ہے۔ مضمون نگار بیان کرتے ہیں کہ اکتوبر 1957ء کی ایک سہ پہر شاہد کی ڈگری حاصل کرنے کے بعد ہم چند طالبعلم …مزید پڑھیں

ربوہ کا ماحول اور بزرگان کی شفقتیں

روزنامہ ’’الفضل‘‘ ربوہ 6 اپریل2012ء میں مکرمہ الف۔لطیف صاحبہ کے قلم سے ربوہ کے ابتدائی زمانہ کی چند یادیں شامل اشاعت ہیں۔ آپ بیان کرتی ہیں کہ مَیں قادیان میں پیدا ہوئی۔ پارٹیشن کے وقت میری عمر 3 سے 4 سال کے لگ بھگ تھی۔ ایک سال لاہور رہے، اس کے بعد ربوہ اس وقت …مزید پڑھیں

حضرت صاحبزادہ مرزا سلطان احمد صاحب

حضرت اقدس مسیح موعود علیہ الصلوٰۃ والسلام کے سب سے بڑے فرزند ارجمند حضرت صاحبزادہ مرزا سلطان احمد صاحب کی سیرۃ و سوانح کے دلکش نقوش روزنامہ ’’الفضل‘‘ ربوہ کے 14؍جون 2008ء سے 26؍جون 2008ء کے شماروں میں حضرت اقدس مسیح موعود علیہ الصلوٰۃ والسلام کے سب سے بڑے فرزند ارجمند حضرت صاحبزادہ مرزا سلطان …مزید پڑھیں

سیرۃ محترم سیّد میر داؤد احمد صاحب مرحوم و مغفور

(مطبوعہ رسالہ انصارالدین نومبر و دسمبر2015ء) سال گزشتہ میں اشاعت کے مراحل طے کرکے ہر طبقۂ فکر میں پسندیدگی کی نظر سے دیکھی جانے والی ایک نہایت خوبصورت کتاب حضرت میر داؤد احمد صاحبؒ کی زندہ و جاوید پاکیزہ سیرت کے حوالہ مرتّب کی گئی تھی۔ حضرت میر صاحب ؓ بے شمار خوبیوں کے مالک …مزید پڑھیں

حضرت صاحبزادہ مرزا سلطان احمد صاحب

حضرت مسیح موعود علیہ الصلوٰۃ والسلام کے سب سے بڑے فرزند ارجمند کی سیرۃ و سوانح کے دلکش نقوش حضرت صاحبزادہ مرزا سلطان احمد صاحب (تحقیق: میرانجم پرویز صاحب اور مرتبہ: فرخ سلطان محمود) (مطبوعہ انصارالدین مئی جون 2016ء) حضرت مسیح موعود علیہ السلام ابھی پندرہ سولہ سال کی عمر کے ہی تھے جب آپ …مزید پڑھیں

حضرت سیدہ نواب مبارکہ بیگم صاحبہؓ

حضرت ام المومنین سیدہ نصرت جہاں بیگم صاحبہؓ کو الہام میں خدیجہ کا نام دیا گیا اور حضرت مسیح موعودؑ فرماتے ہیں کہ یہ نام اس لئے دیا گیا کہ وہ ایک مبارک نسل کی ماں ہے۔ چنانچہ حضرت ام المومنینؓ کے بطن سے حضرت نواب مبارکہ بیگم صاحبہؓ 2؍مارچ 1897ء کو پیدا ہوئیں۔ حضور …مزید پڑھیں

حضرت میر محمد اسحٰق صاحبؓ

روزنامہ ’’الفضل‘‘ ربوہ 10؍مئی 1997ء میں مکرم مولانا محمد صدیق شاہد صاحب گورداسپوری اپنے مضمون میں حضرت میر محمد اسحاق صاحبؓ کا ذکرِ خیر کرتے ہوئے لکھتے ہیں کہ حضرت میر صاحبؓ مدرسہ احمدیہ کے ہیڈماسٹر تھے اور ہر بچے پر آپؓ کی شفقت عیاں اور یکساں تھی۔ آپؓ کو یہ امر پسند نہیں تھا …مزید پڑھیں

حضرت ڈاکٹر میر محمد اسماعیل صاحبؓ کا تعلق باللہ

روزنامہ ’’الفضل‘‘ ربوہ 17؍ اگست 1996ء میں حضرت ڈاکٹر میر محمد اسماعیل صاحب رضی اللہ عنہ کی بعض گھریلو باتیں آپ کی صاحبزادی محترمہ طیبہ صدیقہ صاحبہ نے بیان کی ہیں۔ آپؓ ہمیشہ باوضو رہا کرتے تھے۔ ریٹائرڈ ہوئے تو قادیان میں رہائش پذیر ہوئے۔ آپؓ فرمایا کرتے تھے کہ ’’میری وفات جمعہ کو یا …مزید پڑھیں

پاکیزہ بچپن

ماہنامہ’’ تشحیذالاذہان ‘‘ربوہ کا دسمبر 1996ء کا شمارہ ’’بچپن نمبر‘‘ کے حوالہ سے خصوصی اشاعت ہے۔ اس شمارہ سے بعض دلچسپ واقعات ہدیۂ قارئین ہیں:- آنحضرتﷺکا پاکیزہ بچپن زمانہ جاہلیت میں عربوں کو ایسی مجالس منعقد کرنے کا شوق تھا جن میں شراب نوشی ہو اور لغو شعر و شاعری سنی اور سنائی جائے۔ خداتعالیٰ …مزید پڑھیں

حضرت میر داؤد احمد صاحب

روزنامہ ’’الفضل‘‘ ربوہ 18؍نومبر میں حضرت سیدہ نواب مبارکہ بیگم صاحبہؒ کی ایک پرانی تحریر شائع ہوئی ہے جو آپؓ نے حضرت میر داؤداحمد صاحب کی وفات پر رقم فرمائی تھی۔آپؓ فرماتی ہیں: ’’1924ء کا ذکر ہے مَیں امّ داؤد کو ملنے گئی۔انہوں نے کہا میں نے خواب بوقت سحر دیکھا ہے کہ کسی شخص …مزید پڑھیں

حضرت صاحبزادہ مرزا سلطان احمد صاحب

حضرت صاحبزادہ مرزا سلطان احمد صاحب سیدنا حضرت اقدس مسیح موعود علیہ السلام کے حرم اول سے بڑے صاحبزادے تھے۔ 1852ء میں پیدا ہوئے۔ ابتدائی تعلیم کے بعد دہلی چلے گئے، کچھ عرصہ دیوبند میں بھی بسلسلہ تعلیم مقیم رہے پھر سرکاری ملازمت شروع کی اور ترقی کرتے کرتے اکسٹرا اسسٹنٹ کمشنر اور پھر افسر …مزید پڑھیں